عضو تناسل کی لمبائی کس عمر تک ممکن؟

عضو تناسل کی لمبائی کس عمر تک ممکن؟

عام حالت میں عضو تناسل کی لمبائی 3 سے 4 انچ تک ہوتی ہے۔ لیکن استادگی(عضو کے کھڑے ہو جانے کے وقت) اس کی لمبائی 5 سے 7 انچ تک ہوتی ہے۔

اُن مردوں کا عضو تناسل جو 3 انچ سے کم ہو، انکے ازدواجی زندگی پر کوئی فرق نہیں پڑتا اسلیئے کہ عورت کے عضو تناسل کی گہرائی 3 انچ اور چوڑائی ڈیڑھ ( 1/2 1) انچ ہوتی ہے۔

عضو تناسل کے چھوٹے ہونے کی وجہ سے اولاد کی پیدائش پر اثر انداز سکتا ہے کہ نہیں اس حوالے سے یہ بات یاد رہے کہ آلہ تناسل کا چھوٹا ہونا اولاد کی پیدائش کے ساتھ تعلق نہیں رکھتا بلکہ یہ “سپرم” ہوتے ہیں جو کروڑوں میں سے ایک ماں کے انڈے کے ساتھ یکجا ہوتا ہیں اور حمل ٹھہرتا ہے۔

آلہ تناسل 10 سال کی عمر سے لیکر 14 سال کی عمر تک بڑھتا ہے۔ ہر لڑکے میں یہ مختلف ہو سکتا ہے بعض میں جلدی اور بعض میں دیر سے بڑھتا ہے۔ سب سے پہلے تھیلی منی بڑھنا شروع ہوتی ہے اور آہستہ آہستہ وہاں بال اگنے لگتے ہیں، اسکے بعد آلہ تناسل بڑھنا شروع ہوتا ہے۔ پہلے لمبائی میں اور پھر چوڑائی میں بڑھتا ہے۔ ایک بالغ لڑکے کا اندازتا 5 سے 11 سینٹی میٹر ہوتا ہے۔ بعض کی 4 سینٹی میٹر بھی ہو سکتی ہیں۔ لیکن نوجوانوں میں عضو تناسل کا سائز اس وقت تک بڑھتا ہے جب تک کہ ان کا قد نہیں رکھ جاتا۔ جب قد بڑھنا رُک جائے تو عضو تناسل 1 یا دو سال کے بعد بڑھنا رک جاتا ہے۔

مرد کے جسمانی لحاظ سے بھی عضو تناسل کی سائز پر اثر انداز ہوتا ہے۔ وہ لوگ جو موٹے ہو اور زیادہ وزن رکھتے ہو انکا آلہ تناسل چھوٹا معلوم ہوتا ہیں اسلیئے کہ بدن کے گوشت اور چربی نے چھپایا ہوتا ہے۔ بعض حالات یا ایسے جینیٹک بیماریاں بھی ہیں جو آلہ تناسل کے ساتھ تعلق رکھتے ہیں اور ایسے لوگ چھوٹے عضو رکھتے ہیں۔ اسی طرح جس کا ختنہ نہ ہوا ہو، اور طرح کے امراض جو اس مسئلے سے دو چار ہیں ان کا یہ مسئلہ آپریشن کے زریعے سے ٹھیک ہو سکتا ہے۔ اسی طرح 20 ملین لوگوں میں سے ایک بچہ ایسا بھی پیدا ہو سکتا ہے جو آلہ تناسل سے محروم ہو۔ یہ ایک الگ بحت ہے۔

Leave a Reply