چمڑے رنگنے والے کی بیوی کا عجیب قصہ

چمڑے رنگنے والے کی بیوی کا عجیب قصہ

ﺍﯾﮏ ﻟﮍﮐﯽ ﮐﯽ ﺷﺎﺩﯼ ایسے گھر میں ہوئی جن کا کاروبار  چمڑے کی صفائی اور اس کا رنگنا تھا  -ﭼﻮﻧﮑﮧ ﭼﻤﮍﺍ ﺭﻧﮕﻨﮯ ﮐﮯ ﮐﺎﻡ ﻣﯿﮟ ﭼﻤﮍﮮ ﮐﯽ ﺑﺪﺑﻮ ﺁﺗﯽ ﮨﮯ ﺗﻮ ﺟﺐ ﻭﮦ ﻟﮍﮐﯽ ﺍﭘﻨﮯ ﺳﺴﺮﺍﻝ ﭘﮩﻨﭽﯽ ﺗﻮ ﺍﺳﮯ ﮔﻬﺮ ﻣﯿﮟ ﭼﻤﮍﺍ ﺭﻧﮕﺎﺋﯽ ﮐﯽ ﻭﺟﮧ ﺳﮯ ﺑﮩﺖ ﺑﺪﺑﻮ ﺁﺋﯽ -ﻣﺠﺒﻮﺭﯼ ﺗﻬﯽ ، ﮐﯿﺎ ﮐﺮﺗﯽ — ﺧﯿﺮ ﺍﺱ ﻧﮯ ﮨﺮ ﻭﻗﺖ ﮔﻬﺮ ﮐﻮ ﺻﺎﻑ ﺳﺘﮭﺮﺍ ﺭﮐﮭﻨﮯ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﺧﻮﺏ ﺻﻔﺎﺋﯽ ﻭﻏﯿﺮﮦ ﮐﺮﻧﮯ ﮐﯽ ﻋﺎﺩﺕ ﮈﺍﻝ ﻟﯽ – ﮐﭽﮫ ﻋﺮﺻﮯ ﮐﮧ ﺑﻌﺪ ﺍﺳﮯ ﮔﻬﺮ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﭼﻤﮍﮮ ﮐﯽ ﺑﺪﺑﻮ ﺁﻧﯽ ﺑﻨﺪ ﮨﻮﮔﯽ ۔ اس پر لڑکی کو بہت خوشی ہوئی اور وہ ہر ایکسے کہتی ہکہ دیکھوں میری صفائی کی عادت کی وجہ سے گھر سے بدبوختم ہو چکی ہے

 

لیکن دراصل بات یوں تھی کہ  وہ چونکہ اب اس بدبو کی عادی ہو گئی تھی جس کی وجہ سے اس کی حس ختم ہو چکی تھی ۔ لیکن وہ سمجھتی تھی کہ شاید بدبو ختم ہو چکی ہے ۔

ایسے ہی ایک گناہ گار کی زندگی ہوتی ہے جب وہ بار بار گناہ  کرتا ہے تو اسے وہ گناہ لگنا ختم ہو جاتا ہے اور پھر ایک دن ایسا آتا ہے کہ لوگوں میں اپنی گناہ کی خود ہی تشہیر کرتا ہے اور بڑے فخر سے بتاتا ہے کہ میں نے فلاں گناہ کیا ہے

Leave a Reply