ایم آر آئی مشین نے آدمی کو زندہ نگل لیا

ایم آر آئی مشین نے آدمی کو زندہ نگل لیا

ممبئی کے ایک ہسپتال میں  راجیش مارو نامی ایک شخص ایم آر آئی مشین میں پھنس کر اپنی زندگی کی بازی ہار گیا۔ تفصیلات کے مطابق یہ شخص ہسپتال میں اپنے کسی رشتہ دار سے ملنے آیا تھا۔

 

 

ایم آر آئی مشین میں مقناطیسی قوت پائی جاتی ہے جو دھات کو اپنی طرف کھینچتی ہے۔ راجیش جب ایم آر آئی روم میں داخل ہوا تو اس کے ہاتھ میں آکسیجن سلنڈر تھا جس کے نتیجے میں وہ مشین کی طرف کھنچتا چلا گیا۔

 

 

مقتول کے گھر والوں نے ہسپتال انتظامیہ کو اس واقعے کا زمہ دار قرار دیا اور کہا کہ راجیش کے داخلے سے پہلے ٹیکنیشین نے ان کو یقین دہانی کرادی تھی کہ مشین بند کردی گئی ہے۔

مقتول کے رشتہ داراور عینی شاہدین کےمطابق واقعے سے پہلے راجیش اور ان سب کو معلوم تھا کہ دھات کی بنی ہوئی چیزوں کے ساتھ اسکیننگ روم  میں داخل ہونے کی اجازت نہیں ہے۔

انہوں نے راجیش کو سمجھایا کہ سلنڈر کے ساتھ جانا منع ہے تو اس نے کہا کہ سب چلتا ہے، ہمارا روز کا کام ہے

اجیش کے رشتہ دار نے بتایا کہ راجیش جب کمرے میں داخل ہوا تو اس کے بائیں ہاتھ میں موجود سلنڈر مشین میں پھنس گیا اور  اس کا ہاتھ سلنڈر اور مشین کے درمیان پھنس گیا۔

 

انہوں نے بتایا کہ جب تک ہم راجیش کو باہر نکالنے میں کامیاب ہوئے تب تک اس کی انگلیاں بُری طرح زخمی تھیں اور اس کی حالت بہت نازک تھی۔

راجیش کو فوری طور پر ٹراما وارڈ میں میں لےجایا گیا اور اسے الیکٹرک شاک دئیے گئے پر ڈاکٹرز اسے بچانے میں ناکام رہے۔

پولیس نے ڈاکٹر، وارڈ بوائے اور اٹیندنٹ کو گرفتا رکرلیاہے جو کہ اس حادثےکے وقت ایم آر آئی روم میں موجود تھ

Leave a Reply