یہ خاتون لوگوں کے جسم سے کیا چیز نکالتی ہے جس کو اس کے پیسے بھی ملتے ہیں

یہ خاتون لوگوں کے جسم سے کیا چیز نکالتی ہے جس کو اس کے پیسے بھی ملتے ہیں

ڈریکولا نامی کردار کےبارے میں توسب ہی جانتےہیں جو ایک خون آشام بلا ہوتی ہے جو لوگوں کا رات کے وقت خون پیتی ہے اور سن کے اجالے میں باہر نہیں آتی کیونکہ اس کی روشنی سے ڈریکولا کی موت واقع ہو جاتی ہے لیکن کیا آُ نے اس خاتون کے بارے میں سنا ہے جو کہ حقیقت میں لوگوں کا خون پیتی ہے اور لوگ اس کام کے اسے ادائیگی بھی کرتی ہے

رپورٹ کے مطابق اس خاتون کا ڈارک روز ہے جب کہ اس کی دو بیٹیاں بھی ہےاور اس کی عمر 50 سال ہے لیکن لگتا ہے جسیے کوئی جواب لڑکی ہو اس کا تعلق امریکہ کی ریاست پنسلوانیا سے کے شہر نوسکین ہے اور ویسے بھی یہ ریاست ڈیرکولا کی وجہ سے مشہور ہے ۔ ڈارک روز کا کہنا ہے کہ گزشتہ 30 سال سے وہ یہ کام کر رہی ہے۔ اور اس دوران میں سینکڑوں خواتین اور مردوں کا خون پی چکی ہے ۔

اس کا طریقہ کار یہ ہے کہ اس کہ پاس گاہگ خود آتے ہیں اور یہ ان سے پہلے اپنی فیس لیتی ہے اور اس کے بعد ان سے پوچھتی ہے کہ کونسی جگہ سے کون پلانا ہے اس کے بتانے کے بعد ان کے جسم میں اپنے دانت گاڑتی ہے اور ان کا خون پیتی ہے ۔ یہ اس کا کام ہے اور اسی سے اپنا کام چلاتی ہے روز کا کہنا ہے کہ مجھے

اس خون پینے کے عمل کے بعد تروتازگی محسوس ہوتی جب کہ گاہگ کو جنسی تسکین ملتی ہے ۔ اور یہی میرا بزنس ہے ۔ لیکن اس کے جاننےوالے اس سے نفرت کرتے ہیں جس کی وجہ سے اس پر اس کی پڑوسی نے گاڑی چڑھانے کی بھی کوشش کی

Leave a Reply