میں نے ڈوبتی کار سے بچے کو بچایا لیکن میری گرل فرینڈ نے کئے کرائے پر پانی پھیر دیا

میں نے ڈوبتی کار سے بچے کو بچایا لیکن میری گرل فرینڈ نے کئے کرائے پر پانی پھیر دیا

اگر کسی کی کردار کشی کی جائے یا سے کوئی ذہنی یا جسمانی تکلیف دے تو اس صورت میں وہ عدالت سے رجوع کر سکتا ہے لیکن ہم آج کو ایسی لڑکی کے بارے میں بتائے گے جس نے روپے کی خاطر ایک ایسے خاندان پر ہرجانہ کا دعوی کر ڈالا جس کے 5 افراد ایک کار ایکسیڈنٹ میں ڈوب کر مرگئے ۔ لیکن اس لڑکی نے موقف اختیار کیا کہ ان کے ڈوبنے سے مجھے تکلیف ہوئی اور مجھے نقصان کا سامنا کرنا پڑا جس کی وجہ سے مجھے ناقابل تلافی نقصان ہوا ۔


رپورٹ کے مطابق 2016ءمیں سٹیفنی نوکس نامی یہ لڑکی اپنے بوائے فرینڈ ڈیویٹ والش کے ساتھ گاڑی میں جا رہی تھی۔ ان کے ساتھ ایک اور گاڑی میں ایک فیملی کے کچھ افراد بھی سفر کر رہے تھے۔ اس گاڑی کو حادثہ پیش آ گیا اور وہ ایک جھیل میں جا گری۔ ڈیویٹ نے اپنی جان کی پروا کیے بغیر خون جما دینے والی سردی میں پانی میں چھلانگ لگا دی اور ایک بچے کو بچانے میں کامیاب ہو گیا جبکہ کار میں موجود باقی پانچ افراد جاں بحق ہو گئے۔اس دوران سٹیفنی کنارے پر کھڑی یہ سب کچھ دیکھتی رہی۔ اب اس نے حادثے کا شکار ہونے والے اس خاندان کے رشتہ داروں کے خلاف مقدمہ درج کروا دیا ہے جس میں اس نے موقف اختیار کیا ہے کہ ”مجھے ان لوگوں کو مرتے ہوئے دیکھنا پڑا جس کی وجہ سے میں شدید ذہنی خلفشار کا شکار ہو گئی۔ ذہنی عارضہ لاحق ہونے پر میری نوکری بھی چلی

گئی اورمجھے شدید مالی و جسمانی نقصان اٹھانا پڑا، چنانچہ اس فیملی سے مجھے اس نقصان کا ہرجانہ دلوایا جائے۔“ رپورٹ کے مطابق سٹیفنی کے اس مقدمے کی بنیاد یہ ہے کہ حادثے کا شکار ہونے والی کار کے 49سالہ ڈرائیور سین مک گروٹی نے اس وقت بہت زیادہ شراب پی رکھی تھی جس کی وجہ سے حادثہ پیش آیا۔ اس نے درخواست میں لکھا ہے کہ ”اگر گروٹی نے شراب نہ پی ہوتی تو مجھے یہ سب نہ دیکھنا پڑتا اور اس نقصان سے دوچار نہ ہوتی۔“ سٹیفنی کے اس اقدام پر ڈیویٹ کا کہنا ہے کہ”میری سابق گرل فرینڈ یہ سب کچھ صرف پیسے کے لیے کر رہی ہے۔اس سے بڑی بے حسی اور کیا ہو گی کہ اس نے اس خاندان کے خلاف مقدمہ

درج کروا دیا ہے جس کے پانچ افراد کارحادثے میں موت کے گھاٹ اتر گئے۔“
مجھے بہت شرمندگی ہے کہ جس خاندان کے افراد کو میں نے بچانے کی کوشش کی اب اسے میری سابقہ گرل فرینڈ معاشی طور پر نقصان پہنچانے کی کوشش میں لگی ہوئی ہے اور وہ یہ سب کچھ صرف پیسے کیہ خاطر رہی ہے ، میری عدالت سے درخواست ہے کہ اس کا کیس خارج کر دیا جائے

Leave a Reply