میں ہمیشہ کنڈوم پہن کر دخول کرتا ہوں لیکن اسکے باوجود میری بیوی حاملہ ہو جاتی ہے

میں ہمیشہ کنڈوم پہن کر دخول کرتا ہوں لیکن اسکے باوجود میری بیوی حاملہ ہو جاتی ہے

کنڈوم ربر سے بنا غلاف ہوتا ہے جسے منی کو عورت کے رحم میں داخل ہونے سے روکنے کے لیے استادہ عضو تناسل پر پہنا جاتا ہے۔ زیادہ تر کنڈوم لیٹیکس سے بنتے ہیں۔ اسے جنسی تعلق قائم کرنے سے پہلے استادہ عضو تناسل پر پہننا چاہیے۔ یہ رکاوٹ کے طور پر کام کرتا ہے اور اندام نہانی تک جانے والے منی کے راستے کو بند کردیتا ہے، اور اس طرح حاملہ ہونے سے محفوظ رکھتا ہے۔

اگر اسے صحیح طور پر استعمال کیا جائے، تو یہ 85% تا 98% حمل کو روک سکتا ہے۔ اسے تنہا استعمال کیا جاسکتا ہے یا مانع حمل کا زیادہ اثر حاصل کرنے کے لیے اسے دیگر مانع حمل طریقوں جیسے مانع حمل گولیاں، مانع حمل انجکشن یا درون رحمی آلہ کے ساتھ بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔ جن لوگوں کو لیٹیکس سے الرجی ہوتی ہے، وہ پولی یوری تھین سے بنے کنڈوم استعمال کرسکتے ہیں۔

فوائد

یہ استعمال کرنے میں آسان اور زیادہ تر لوگوں کے لئے موزوں ہے۔ کنڈوم کا استعمال ہیومن امیونو ڈیفیسی اینسی وائرس (ایچ آئی وی) سمیت جنسی طور پر منتقل ہونے والی بیماریوں کے خطرات کو کم کر سکتا ہے۔

نقصانات

ہر جنسی تعلق کے وقت اسے صحیح طور پر استعمال کرنا چاہیے؛ ورنہ مانع حمل کا اثر کم ہوجائے گا۔ کنڈوم میں استعمال ہونے والا چکنا کرنے والا مادہ تکلیف دہ ہوسکتا ہے۔ انگلی کے ناخن، انگوٹھی اور تیز دھار دار چیزوں سے آسانی سے پھٹ جاتا ہے۔

کنڈوم کا صحیح استعمال

ہر جنسی تعلق کے لیے نیا اور اچھا معیاری کنڈوم استعمال کریں۔ استعمال سے پہلے کنڈوم کے پیکیٹ کی اختتامی تاریخ اور اس کے صحیح سالم ہونے کی جانچ کرلیں۔ کنڈوم کو اس کے پیکیٹ سے نکالیں۔ قینچی استعمال نہ کریں اور یہ دھیان رکھیں کہ باہر کھینچتے وقت یہ پھٹ نہ جائے۔ کسی بھی تناسلی اتصال سے پہلے عضو تناسل پر کنڈوم چڑھائیں۔ دھیان سے، کنڈوم کے سرے کو پکڑیں اور اسے دبا کر ہوا نکالیں۔ اس سے انزال کے بعد منی جمع ہونے کے لیے جگہ بن جائے گی۔

کنڈوم کو استادہ عضو تناسل کے آخری سرے پر چڑھائیں۔ اسے دوسرے ہاتھ سے پھیلاتے ہوئے استادہ عضو تناسل کے بالکل نیچے لے کر آئیں۔ صرف پانی پر مبنی چکنا کرنے والا مادہ استعمال کریں جیسے کے وائی جیلی۔ تیل پر مبنی چکنا کرنے والا مادہ جیسے بیبی آئل، ویسلین، سے کنڈوم پھٹ سکتا ہے۔

انزال کے بعد اور عضو تناسل کے نرم ہونے سے پہلے، کنڈوم کے کنارے کو پکڑیں اور اسے احتیاط سے باہر نکالیں۔ نکالنے کے دوران کنڈوم کے کنارے کو پکڑیں اور دھیان رہے کہ کوئی منی گر نہ جائے۔ استعمال شدہ کنڈوم کو اچھی طرح ختم کرلیں۔ اگر جنسی تعلق کے دوران کنڈوم پھٹ یا پھسل جاتا ہے، تو آپ کو جلد سے جلد ہنگامی منع حمل (مباشرت کے بعد منع حمل) کے لیے طبی صلاح لینی چاہیے۔

ان نکات کو نوٹ کرلیں

کنڈوم کے استعمال سے ہیومین امیونو ڈیفیسیئنسی وائرس (ایچ آئی وی) سمیت جنسی طور پر منتقل ہونے والی بیماریوں کا خطرہ کم ہوسکتا ہے۔ مؤثر مانع حمل اثر کے لیے آپ کو ہر جنسی تعلق میں کنڈوم کو صحیح طور پر استعمال کرنا چاہیے۔ اگر جنسی تعلق کے دوران کنڈوم پھٹ یا پھسل جاتا ہے، تو آپ کو جلد سے جلد ہنگامی منع حمل کے لیے طبی صلاح لینی چاہیے۔

Leave a Reply