فیس بک نے ننگی تصاویر مانگنی شروع کردی

فیس بک نے ننگی تصاویر مانگنی شروع کردی

جہاں سوشل میڈیا کا مثبت استعمال یا جاتاہے وہاں پر جرائم پیشہ عناصر اسے عام آدمیوں کی بلیک میلنگ کے لئے بھی استعمال کرتے ہیں ۔ خاص کر اس وقت جو سب سے بڑا مسئلہ ہے وہ ہے کسی کی ذاتی قابل اعتراض تصاویر کو فیس بک پر شائع کرنا ہے ۔ بعض دفعہ بے وقوف خواتین اپنی ننگی  تصاویر اپنے ناجائز آشنا کو دے جاتی ہے جس سے کے بعد  وہ اس ان کو مسلسل تنگ کرتے رہتے ہیں بلکہ بعض تو اس کو فیس بک پر لگا دیتے ہی

اس کا توڑ اب فیس بک نے نکالا ہے ۔ تفصیالات کے مطابق اگر کسی عورت کے ساتھ اس طرح کا مسئلہ پیش آیا ہے تو وہ فورا اپنی اسی توری کو فیس بک انتظامیہ کے پاس بھیج دے ۔ فیس بک ایکسسٹم کے ذریعہ اس تصویر کو نمبروں میں بدل دے گا ۔ جس کے بعد جب بھی وہ تصویر کہی سے بھی آئی گی تو نمبروں میں نظر آئے گی ۔ یعنی کوئی بھی ان تصاویر کو اپلوڈ نہیں کر سکے گا

فیس بک اس کے لئے ایک جدید ترین ٹیکنالوجی کا استعمال کر رہی ہے  جس کو ” فوٹو ڈی این اے ” کے نام سے جانا جاتا ہے ۔

 

 

فیس بک کو بھیجی گئی تصاویر کے ساتھ ملتی جلتی کسی بھی تصویر کو پہچان کر اس کی اپ لوڈنگ کو ناممکن بنا دے گی۔ اگر تصویر میں کسی قسم کا ردوبدل کردیا جائے تو بھی یہ ٹیکنالوجی قابل اعتراض تصویر کی پہچان کر کے اسے اپ لوڈ نہی ہونے دے گی۔

Leave a Reply