باپ کی عجیب قربانی

باپ کی عجیب قربانی

والدین کی ذات ایسی ہےجو اپنی اولاد کی خاطر ہر طرح  کا  کام کر گزرتی ہے تا کہ ان کی زندگی پر سکون ہو اور ان کو کسی طرح کی تکلیف نہ ہو

رپورٹ کے مطابق ادریس نے بتایا ”میں نے اپنی ساری جمع پونجی بچیوں کی تعلیم پر لگا دی ۔ میں نے کپڑوں کی جگہ کتابیں خریدی کیونکہ میں چاہتا تھا کہ وہ عزت کی زندگی گزاریں۔ میں نے اپنی بیٹیوں سے یہ بات ہمیشہ خفیہ رکھی کہ میں ایک بھنگی ہوں جو لوگوں کے کچرے ان کے گند اور ان کے باتھ روموں کی صفائی کرتا ہے ۔ میں ہمیشہ نہا دھو کر صاف کپڑے پہن کر گھر جاتا تا کہ ان کو میری اصلیت  معلوم نہ ہو سکے  میں انہیں اعلیٰ تعلیم دلوانا چاہتا تھا اور میں نے اپنا ایک ایک روپیہ ان کی تعلیم پر لگایا

 

ایک بار چھوٹی بیٹی کی تعلیمی سال پر میرے پاس کچھ نہیں تھا ۔ جب میرے ساتھیوں نے مجھے کوڑے کے ڈھیر کے پاس بیٹھ کر آنسو بہاتے دیکھا تو وہ سب میرے پاس آگئے۔ انہیں میرے رونے کی وجہ معلوم ہوئی تو کہنے لگے ’کیا تم ہمیں اپنا بھائی نہیں سمجھتے ہو؟‘ اس کے بعد ان سب نے اس دن کی مزدوری میرے ہاتھ پر رکھ دی۔ اب میری سب سے چھوٹی بیٹی کی بھی یونیورسٹی کی تعلیم مکمل ہونے والی ہے۔ اب وہ اکثر کھانا لے کر میرے ساتھیوں کے پاس جاتی ہے۔ وہ ان سے کہتی ہے کہ آپ لوگمیرے محسن ہے میں کبھی آپ لوگوں کو بھول نہیں سکتی

Leave a Reply