آئیں اور کنواری لڑکیاں خریدیں اگر ایک سال کے اندر اندر بھاگ جائے تو دوسری فری ملے گی ایسا اشتہار جو آپکے ہوش اڑادے گا

آئیں اور کنواری لڑکیاں خریدیں اگر ایک سال کے اندر اندر بھاگ جائے تو دوسری فری ملے گی ایسا اشتہار جو آپکے ہوش اڑادے گا

ارے بھئی یہ تو وہی لبرل لوگ ہیں جو کہتے ہیں اسلام نے عورت کو قید کر رکھا ہے ۔اسے آزادی نہیں دی ۔یہی مغرب کی برہنہ اور اندھی تقلید کی پیروی کرنے والے ہمارے اسلام پر جملے کستے ہیں یہ ہے انکے نزدیک عورت کا معیار عورت کا مقام۔۔جاری ہے

عورت کے بدن سے پیدا ہو کر عورت کو بیچنا اور شرائط ِ فروخت اتنی ہی گٹھیا جتنا یہ کاروبار اور کاروباری ۔یعنی من پسند لڑکی لے جاؤ اور اگر دی ہوئی مدت سے قبل مر جائے یا بھاگ جائے تو دوسری فری لے جاؤ.تھو ایسی لبریزم پر جسمیں عورت بکتی ہے کسی بازار میں پڑی بے جان احساس سے عاری چیزوں کی طرح۔یہ آزادی ہے یا بربادی ؟ میرے نزدیک تو عورت کی آزادی یہ ہے کہ وہ نہ چاہے تو کوئی اسے دیکھ نہ سکے.

اسکی رضا نہ ہو تو کوئی اسے چھو نہ سکے اس سے مذاق نہ کرسکے بات نہ کر سکے ۔آزاد عورت وہ ہوتی ہے جس سے غیرمردبات کرتے ہوئے حدود کا خیال رکھے ۔کوئی بھی غلط بات کرتے ہوئے سوچے کہ کہیں اسے برا نہ لگ جائے ۔ کہیں اسکا اپنا مقام نہ گرجائے۔مرد کے دل میں ایک ڈر ہو خوف ہو کہ میرے منہ سے کچھ ایسی بات نہ نکل جائے جو اسے ناگوار گزرے ۔آزاد عورت وہ ہوتی ہے جسے اپنی عزت کروانی آتی ہے ۔آزاد عورت سے ہاتھ ملانا تو درکنار کوئی ایرا غیرا مرد نگاہ ملا کر بھی بات نہیں کر پاتا۔آزاد عورت اگر کسی کی قید میں ہوتی ہے تو وہ محبت ہے ۔اپنوں کی محبت جس سے وہ کبھی رہائی نہیں چاہتی وہ اس قید میں ساری عمر گزار دہتی ہے انکے ہر چھوٹے بڑے کام کو باخوشی کرتے کرتے.۔جاری ہےحیاء عورت سے آزاد ہوجائے تو عورت کئیں مردوں کی قید میں آجاتی ہے۔

کاندھے سے کاندھا ملا کر مرد کے شانہ بشانہ چلنے کا لالچ کتنی عورتوں کو مردوں کے بستر تو کبھی قدموں میں گرادیتا ہے ۔آزاد عورت صرف وہ ہے جو اسلام کی حدود میں ہے دائرہ اسلام میں ہے۔جتنی عزت پاکستان میں خواتین کو دی جاتی ہے وہ یقیناً دیدنی ہے اور قابل تعریف اور قابل شکر ہے ۔آج بھی بہت سے ایسے مسلمان مرد ہیں جو عورت کی بہت عزت کرتے ہیں ۔ہماری روزمرہ زندگی میں کئیں مثالیں ہمارے سامنے ہیں ۔چاہے مسافروں سے بھری بس ہو یا کہیں لگی لمبی قطار ۔عورت کو ہمیشہ ترجیح اور فضیلت دی جاتی ہے ۔کس نے سکھایا ہمارے مردوں کو عورت کی عزت کرنا؟ اسلام نے.؟اور اسی طرح عورت کو عزت کروانا بھی اسلام نے سکھایا۔یونانی کہتے ہیں کہ عورت سانپ سے زیادہ خطرناک ہے۔بقول سقراط عورت سے زیادہ اور کوئی چیز دنیا میں فتنہ و فساد کی نہیں۔بونا وٹیوکر کا کہنا ہے کہ عورت اس بچھو کی مانند ہے جو ڈنگ مارنے پر تلا رہتا ہے۔یوحنا کا قول ہے کہ عورت شر کی بیٹی ہے اور امن و سلامتی کی دشمن ہے۔۔جاری ہے

Leave a Reply