حمزہ شہباز کے خلاف فوری کروائی ۔ چیف جسٹس کا دبنگ فیصلہ

حمزہ شہباز کے خلاف فوری کروائی ۔ چیف جسٹس کا دبنگ فیصلہ

چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں قائم سپریم کورٹ کے 3رکنی بنچ نے حمزہ شہباز شریف کے گھر کے باہر حفاظت کے لئے لگائی گئی رکاوٹیں فوری طورختم کرنے  کا حکم دیتے ہوئے کہا  کہ اگر ان کی جان کو کوئی  خطرہ ہے تو پھر یہا ں سے کہی اور چلے جائے ۔جسٹس میاں ثاقب نثار نے مزید ریمارکس دیئے کہ میں چیف جسٹس ہوں اور  میری رہائش گاہ کے باہر تو کوئی رکاوٹ نہیں ہے۔میں نہیں جانتا حمزہ شہباز کون ہیں ؟مجھے عدالتی احکامات پر مکمل عمل درآمد چاہیے ۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں فاضل بنچ نے سٹرکوں پرحفاظتی رکاوٹوں کے خلاف  سو موٹو ایکشن لینے کے بعد  کی سماعت شروع کی۔ تو عدالتی بینچ  نے استفسار کیا کہ  عدالت نے جوڈیشل کالونی میں جس سڑک پرسے بند گیٹ ہٹانے اور راستے کھولنے کا حکم دیا تھا، کیا اس پر عملدرآمد ہو گیاہے، جس پر چیف سیکرٹری پنجاب نے بتایا کہ گیٹ ہٹا دیا گیا ہے اور زگ زیگ رکاوٹیں لگا دی گئیں کیونکہ وہ ایک اہم سیاسی شخصیت کا گھر ہے، اس پر چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کون ہے وہ اہم  سیاسی شخصیت جس کی وہاں رہائش ہے ؟ چیف سیکرٹری نے نام حیل و حجت سے کام لینے کی  کوشش کی تو چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ کیا آپ جانتے ہیں کہ میں کون ہوں؟ ۔ چیف سیکرٹری نے بتایا کہ وہ رہائش گاہ حمزہ شہبازکی ہے، چیف جسٹس نے کہا کہ کھل کر بتائیں یہ کون حمزہ شہبازہے؟ چیف سیکرٹری پنجاب نے عدالت کو بتایا کہ حمزہ شہباز ایم این اے اور وزیر اعلیٰ پنجاب کے بیٹے   ہیں جس پرچیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ یہ لوگ یہاں سے چلے کیوں نہیں جاتے ۔میں کسی حمزہ شہباز کو نہیں جانتا،مجھے عدالتی حکم پر عمل درآمد چاہیے۔ حمزہ شہباز کے گھر کے باہر رکاوٹیں ختم کریں، میں خود پرائیویٹ کار میں دورہ کرکے جائز ہ لوں گا،چیف جسٹس نے خبردار کیا کہ آئندہ حمزہ شہباز کے گھر کے باہر پرائویٹ سیکیورٹی کا کوئی بندہ نہاتے نظر آیا تو  اچھا نہیں ہوگا ،اس گھر کے ارد گرد اور لوگ بھی رہتے ہیں ، اگر آئندہ کوئی شکایت آئی تو سخت  کاروائی ہوگی

Leave a Reply