شرمین چنائی کی ایک اور شرمناک حرکت

شرمین چنائی کی ایک اور شرمناک حرکت

شرمین عبید چنائے کو آسکر ایوارڈ ”سیونگ فیس “ نامی ڈاکومنٹری بنانے کی وجہ سے ملا   اس کے بعد انہوں نے کئی فلمیں بنائیں اور کامیابیاں سمیٹیں مگر اب ان کی ایک ڈاکومنٹری ” سونگ آف لاہور“ امریکہ میں پیش کی جا رہی ہے ، جس میں پاکستانی معاشرے پر انتہائی گھٹیا  الزام لگائے ہیں

 

 

تفصیلات کے مطابق دو دن قبل شرمین عبید چنائے کی ڈاکومنٹری امریکہ کے ”میوزکل انسٹرومنٹ میوزم“ میں دکھائی گئی۔ یہ سچل گروپ کے بینڈ پر بنائی گئی ہیں ۔اس میں دکھایا گیا کہ ایک موسیقی گروپ جو بہت برے حالات میں تھا ، جس کو کئی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا تھا اور انہوں نے کس طرح کامیابی حاصل کی،ان کی کامیابی کی داستان بیان کرنا یقینا اچھی بات ہے مگر شرمین عبید چنائے نے اس میوزیکل گروپ کے برے حالات کو اور ان کو مواقع نہ ملنے کو ان کے اہل تشیع ہونے سے جو ڑا ، اس ڈاکومنٹری میں انہوں نے دکھایا کہ پاکستان موسیقاروں کے لئے ایک خطرناک ملک ہے۔اس ڈاکومنٹری میں دکھایا گیا کہ طالبان آلات موسیقی کو توڑ دیتے ہیں،وہ لاہور اور دوسری جگہوں پر بھی آلات موسیقی کو توڑ کر موسیقاروں کو بھی تشدد کا نشانہ بناتے ہیں۔اس طرح انہیں نے کوشش کی دنی اکو دکھایا جائے کہ پاکستان میں اقلیتیں محفوظ نہیں اور کوئی شیعہ وغیرہ پاکستان میں کسی طرح کا کام نہیں کر سکتا

Leave a Reply