شارخ جاتوئی کی فرعونیت چیف جسٹس کو عجیب جواب

شارخ جاتوئی کی فرعونیت چیف جسٹس کو عجیب جواب

وہ جوان کون تھا جس نے عدالت کے پیشی کے موقع پر وکٹری کا نشان بنایا تھا چیف جسٹس نے جب پوچھا تو شارخ جتوئی کھڑا ہوا اور

مسکرا کر کہا کہ میں تھا

رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز شاہ زیب قتل کیس میں چیف جسٹس نے دوبارہ شارخ جتوئی کو بلایا تھا ۔ کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے پوچھا کہ وہ کون سا  ہینڈ سم جوان تھا جس نے پیشی کے دوران وکٹری کا نشان بنایا تھا تو نیچے بیٹھے شارخ جتوئی نے کھڑا ہو کر ہنس کر  کہا کہ وہ میں تھا ۔ اور یہ میں نے بچپنے میں کیا تھا اس پر چیف جسٹس نے ان کو فورا بیٹھنے کا کہا

واضح رہے کہ سندھ حکوت نے انہیں رہا کر دیا تھا کہ ان کے اور مقتول کے خاندانوں میں دیت کی وجہ سے معاملہ درست ہو چکا تھا لیکن سپریم کورٹ میں پھر سے سماجی کارکنوں کی وہ سے کسی  پیش کر دیا گیا ہے

Leave a Reply